روس یوکرین جنگ کے باعث عالمی مارکیٹ میں سونےکی قیمت کو پر لگ گئے
روس اور یوکرین کی جنگ کے باعث عالمی سطح پر سونےکی مانگ میں اضافہ ہوا ہے اور عالمی صرافہ میں سونےکی فی اونس قیمت... روس یوکرین جنگ کے باعث عالمی مارکیٹ میں سونےکی قیمت کو پر لگ گئے

روس اور یوکرین کی جنگ کے باعث عالمی سطح پر سونےکی مانگ میں اضافہ ہوا ہے اور عالمی صرافہ میں سونےکی فی اونس قیمت 2 ہزار ڈالر سے تجاوز کرگئی۔

سندھ صرافہ بازار جیولرز ایسوسی ایشن کے مطابق پاکستان میں بھی سونےکی فی تولہ قیمت میں 600 روپے اضافہ ہوا ہے اور ایک تولہ سونا 1 لاکھ 30 ہزار روپےکا ہوگیا ہے۔

گرام سونےکی قیمت 515 روپے اضافےکے بعد ایک لاکھ 11 ہزار 454 روپے ہوگئی ہے۔

عالمی صرافہ میں ٹریڈنگ کے دوران  آج 7 فیصد اضافہ ریکارڈ ہوا اور سونےکی فی اونس قیمت28 ڈالرکے اضافےکے بعد 2 ہزار ایک ڈالر اور 63 سینٹ  تک پہنچ گئی۔

عالمی جریدے بلوم برگ کے مطابق سونے کی قیمت میں اضافے کا رجحان امریکا کے اس بیان کے بعد سامنے آیا جس میں امریکی حکومت نے عندیہ دیا ہےکہ روس کی جانب سے یوکرین پر حملے کے بدلے میں روسی تیل کی برآمدات پر پابندی لگائی جاسکتی ہے۔

ماہرین کے مطابق جنگ میں اضافےکے باعث عالمی معیشت پر بدترین اثرات مرتب ہوسکتے ہیں جس سے سونےکی مانگ میں مزید تیزی آنےکا امکان ہے تاہم سرمایہ داروں کو اس بات کے لیے بھی تیار رہنا چاہیےکہ اگر جنگ سے متعلق مفروضے اور اندازے غلط ثابت ہوئے تو سونے کی قدر میں کمی بھی آسکتی ہے۔

alphanew