86فیصد پاکستانیوں کو اس سال روزگار چھن جانے کا خدشہ: سروے
پاکستان میں تیزی سے بڑھتی مہنگائی ، ملکی معاشی صورتحال اور ملک کی سمت پر عدم اطمینان کا اظہار کرنے والوں کی شرح میں... 86فیصد پاکستانیوں کو اس سال روزگار چھن جانے کا خدشہ: سروے

پاکستان میں تیزی سے بڑھتی مہنگائی ، ملکی معاشی صورتحال اور ملک کی سمت پر عدم اطمینان کا اظہار کرنے والوں کی شرح میں مزید اضافہ ہوگیا ہے۔

اپسوس پاکستان  کی عوامی رائے پر مبنی کنزیومر کانفیڈنس سروے کی رپورٹ کے مطابق  مارچ 2021 میں 32فیصد پاکستانی مہنگائی کو اہم مسئلہ سمجھتے تھے جب کہ اب 44فیصد افراد مہنگائی سے پریشان ہیں۔

سروے کے مطابق86 فیصد پاکستانیوں کو اس سال روزگار چھن جانے کا خدشہ ہے۔

ملکی سمت کو غلط کہنے والے پاکستانیوں کی شرح 73 فیصد سے بڑھ کر 80فیصد پر پہنچ گئی ہے۔

ملکی معیشت کی موجودہ صورتحال پر مایوسی کا اظہار کرنے والے پاکستانیوں کی شرح گزشتہ سال کے مقابلے میں 14 فیصد اضافے کے بعد 41 فیصد پر آگئی ہے۔

تاہم مستقبل میں معاشی صورتحال کی بہتری پر 49 فیصد مایوس ہیں اور معیشت کے کمزور رہنے کا خدشہ ظاہر کررہے ہیں۔

alphanew