ڈی آئی جی آپریشنز لاہور احسن یونس کے تبادلے کی افواہیں پھر زروروں پر ڈی آئی جی آپریشنز لاہور احسن یونس کے تبادلے کی افواہیں پھر زروروں پر
احسن یونس حال ہی میں راولپنڈی میں کامیاب ترین تعیناتی گزار کر لاہور تعینات ہوۓ ہیں احسن یونس پاکستان کے بہترین افسر جبکہ ایمانداری... ڈی آئی جی آپریشنز لاہور احسن یونس کے تبادلے کی افواہیں پھر زروروں پر

احسن یونس حال ہی میں راولپنڈی میں کامیاب ترین تعیناتی گزار کر لاہور تعینات ہوۓ ہیں

احسن یونس پاکستان کے بہترین افسر جبکہ ایمانداری اور میرٹ میں نمبر ون کہلاۓ اور مانے جاتے ہیں

راولپنڈی میں پولیس کی کمانڈ کرتے ہوۓ عوام کی خدمت اور سہولت سے لوگوں کے دل جیتے،

راولپنڈی پولیس کے افسر اور اہلکار بھی عوام کی طرح احسن یونس کو اپنا ہیرو مانتے ہیں،اور ان کی دل سے عزت کرتے ہیں

راولپنڈی میں تعیناتی کے دوران احسن یونس پاکستان پولیس پر چھاۓ رہے،

میرٹ، شفافیت اور خود احتسابی کا نعرہ تخلیق کیا اور اسے عملی جامہ پہنا کر دکھایا،

احسن یونس کی ایمانداری اور میرٹ سے راولپنڈی میں بھی احسن یونس کے خلاف مافیاز سرگرم رہے،

ناجائز کام نا ہونے اور پریشر قبول نہ کرنے کی وجہ سے مافیاز نے راولپنڈی میں بھی احسن یونس کے خلاف سازشیں رچائیں اور آۓ دن تبادلے کی افواہیں پھیلائی گئیں،

راولپنڈی سے احسن یونس کے تبادلے پر منشیات فروشوں، قبضہ مافیا، ڈکیت گروہوں اور ٹاؤٹ مافیا نے جشن مناۓ اور مٹھائیاں تقسیم کیں، ذرائع

لاہور میں بھی احسن یونس نے پہلے دن سے دیرینہ مافیاز پر ہاتھ ڈالنا شروع کیا،

بیرونی مافیاز نے محکمہ کے اندر کے کرپٹ عناصر کے ساتھ ملکر اپنی ڈوبتی کشتی کو بچانے کی کوششیں تیز کر دیں، ذرائع

احسن یونس کی لاہور میں تعیناتی مختلف درجوں کے بہت سے کرپٹ افسران کے لئے وبال جان بن گئ، ذرائع

شہریوں کو سہولت دینا ان کا احساس کرنا اور ان کے حق کے لئے ہر طوفان کا سامنا کرنا احسن یونس کا خاصا ہے،

احسن یونس کی ایمانداری لاہور کے محکمانہ اور معاشرتی ناسوروں کے لئے دردسر بن چکی ہے، ذرائع

ایسے ایماندار افسر کا مقابلہ سازشوں کے ذریعے کرنے کی کوششیں کی جانے لگی ہیں، ذرائع

ادھر راولپنڈی کے عوام کا سوال حکومتی ایوانوں سے ہے کہ اگر لاہور پولیس کا قبلہ درست نہیں کرنا تھا تو ایسے افسر سے راولپنڈی کو کیوں محروم کیا گیا،

حکومت کو کھرے کھوٹے کی پہچان نہیں راولپنڈی کی عوام کو ہے احسن یونس کو واپس راولپنڈی بھیج دیا جائے—راولپنڈی کی عوام

آئی جی پر آئی جی بدلنے والی حکومت کو معلوم نہیں کہ کرنا کیا ہے اگر حکومت واقع پولیس میں تبدیلی اور اصلاحات چاہتی ہے تو احسن یونس سے بہتر کوئی نہیں آزما کر دیکھ لیں

سیاسیوں کی طرح بکاو میڈیا بھی احسن یونس سے تنگ ہے کیوں کہ نہ وہ کھاتا ہے نہ کھلاتا حرام کے لقمے کھانے والوں کی چیخیں تو نکلیں گی

شہیدوں کی فیمیلز کو جو عزت احسن یونس کے دور میں ملی وہ کسی اور دور میں نہیں ملی احسن یونس کے دور میں احساس ہوا کے ویلفیر فنڈ نام کی کوئی شے ملازمین کے لیے ہے اس سے پہلے تو بندر بانٹ جاری تھی۔۔

ایک افسر بتا دو جس نے روزانہ کی بنیاد پر 600 سے زائد کھلی کچہریوں کا انعقاد کیا ہو

راولپنڈی کے عوام سوشل میڈیا پر احسن یونس کی بے لوث حمایت کرتے نظر آتے ہیں،

لاہور کو درست کرنے کے لئے احسن یونس سے بہتر چوائس پورے پاکستان میں نہیں، پولیس افسران

کے پی کے پولیس پہلے ہی مثالی پولیس ہے پنجاب کو ایسے افسر سے محروم کرنا بیوقوفانہ اقدام ہو گا،

حکومت نے جس تبدیلی کے خواب دیکھ رکھے ہیں احسن یونس نے راولپنڈی میں ان کو عملی جامہ پہنایا,۔۔

لاہور کو درست کرنا پنجاب کو درست کرنا ہو گا، حکومت اپنے فیصلے پر نظرثانی کرے، لاہور کی عوام

نظریہ ضرورت عوامی مفاد میں کیوں سامنے نہیں آتا؟ لاہور کو ایسے افسر کی اشد ضرورت ہے، لاہور کی عوام

عمران خان عثمان بزدار دونوں کا امتحان ہے کہ وہ ایمانداری کو لیکر چلیں گے یا مافیاز کو چھوٹ دینگے، لاہور کی عوام

لاہور کے عوام کو احسن یونس اور فیاض دیو میں امید کی کرن نظر آ رہی ہے، لاہور کی عوام

یہ کام عمران خان نا کر سکا تو کوئی سیاستدان نہیں کر سکے گا

alphanew