وزیر اعظم کچھ وزرا اور مشیروں کی کارکردگی سے ناخوش ، بڑا فیصلہ کرلیا وزیر اعظم کچھ وزرا اور مشیروں کی کارکردگی سے ناخوش ، بڑا فیصلہ کرلیا
اسلام آباد : وزیر اعظم عمران خان نے کچھ وزرااورمشیروں کی کارکردگی ٖغیر تسلی بخش قرار دیتے ہوئے اپنی ٹیم کی کارکردگی جاننے کا... وزیر اعظم کچھ وزرا اور مشیروں کی کارکردگی سے ناخوش ، بڑا فیصلہ کرلیا

اسلام آباد : وزیر اعظم عمران خان نے کچھ وزرااورمشیروں کی کارکردگی ٖغیر تسلی بخش قرار دیتے ہوئے اپنی ٹیم کی کارکردگی جاننے کا فیصلہ کرلیا اور وزرا کو رپورٹس جمع کرانے کی ہدایت کردی ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم عمران خان کچھ وزرااورمشیروں کی کارکردگی سے غیرمطمئن ہیں ، اس سلسلے میں عمران خان نے اپنی ٹیم کی کارکردگی جاننے کا فیصلہ کرلیا اوروزرا کو وزارتوں کی کارکردگی رپورٹس جمع کرانے کی ہدایت کردی ہے۔

وزیراعظم نے ہدایت کی کہ کس وزیر کی کیا کارکردگی رہی؟ آگاہ کیا جائے جبکہ کس وزیرنےوزارت میں کتنا وقت گزارا؟کتنے اجلاس؟ کیا فیصلے ہوئے؟ اس بارے میں رپورٹ طلب کرلی ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ وفاقی وزرا،وزرائےمملکت اورمشیروں سےکارکردگی رپورٹ مانگی گئی جبکہ وزیراعظم نے وفاقی وزراسےمستقبل میں منصوبہ بندی کی تفصیل بھی طلب کی اور کہا کئی وزارتوں اوران کے ماتحت محکموں کی کارکردگی تسلی بخش نہیں۔

ذرائع کے مطابق وفاقی وزیراپنی وزارت کےمستقبل کی منصوبہ بندی پرمشتمل پلان وزیراعظم آفس بھجوائیں گے ، جس کے بعد وزیراعظم کارکردگی رپورٹس کی بنیاد پر وزرا کے مستقبل کے بارے میں فیصلے کریں گے۔

یاد رہے چند روز قبل وفاقی کابینہ میں اہم تبدیلیاں کی گئی تھیں، وفاقی وزیر خسرو بختیار کا قلمدان تبدیل کر کے اکنامک افیئر کی وزارت سونپ دی گئی جب کہ ایم کیو ایم پاکستان کے خالد مقبول صدیقی کا وزیراعظم نے استعفیٰ منظور کر لیا تھا اور ان کی جگہ ایم کیوایم کے امین الحق کو ٹیلی کمیونی کیشن کا قلمدان دے دیا گیا ہے۔

فخرامام کو وزارت فوڈ سیکیورٹی کا قلمدان دیا تھا جبکہ بابر اعوان کی کابینہ میں واپسی ہوئی اور انہیں وزیراعظم کے پارلیمانی امور کا مشیربنایا دیا گیا تھا۔

alphanew