وزیراعلیٰ پنجاب سے شاہ محمود کی ملاقات، جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ فعال کرنیکا فیصلہ وزیراعلیٰ پنجاب سے شاہ محمود کی ملاقات، جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ فعال کرنیکا فیصلہ
لاہور: وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار سے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے ملاقات کی۔ ملاقات میں باہمی دلچسپی کے امور، سیاسی صورتحال اور... وزیراعلیٰ پنجاب سے شاہ محمود کی ملاقات، جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ فعال کرنیکا فیصلہ

لاہور: وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار سے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے ملاقات کی۔

ملاقات میں باہمی دلچسپی کے امور، سیاسی صورتحال اور جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

ملاقات میں صوبائی وزیر ڈاکٹر محمد اختر ملک اور چیف وہیپ قومی اسمبلی عامر ڈوگر بھی موجود تھے۔

دونوں رہنماؤں کی ملاقات میں جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ مکمل فعال کرنے کے لیے فوری انتظامی اقدامات کا فیصلہ کیا گیا۔

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کا کہنا تھا کہ جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ میں سیکرٹریز کو جلد تعینات کردیا جائے گا اور محکموں کے سیکرٹریز بااختیار ہوں گے جب کہ جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کو انتظامی ومالی لحاظ سے خودمختاری دی جائے گی۔

انہوں نے کہا کہ ملتان، بہاولپور اور ڈیرہ غازی خان ڈویژن سے امور مقامی طورپر نمٹائے جائیں گے۔

اس دوران وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے ملتان میں 100 بستروں کا مدر اینڈ چائلڈ اسپتال بنانے کی منظوری دی اور بتایا کہ مدراینڈچائلڈ اسپتال غلہ منڈی کی پرانی عمارت کی جگہ بنایا جائے گا۔

ان کا کہنا ہے کہ ملتان میں واسا اور سیوریج سے متعلقہ مسائل فوری حل کیے جائیں گے، سابق حکمرانوں نے جنوبی پنجاب کی ترقی کے نام پر لیے گئے فنڈ اپنے حلقوں پر لگائے۔

خیال رہے کہ حکومت پنجاب نے 30 جون کو جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کے لیے انتظامی افسران کے نوٹیفکیشن جاری کیے تھے۔

نوٹیفکیشن کے مطابق انعام غنی کو ایڈیشنل انسپکٹر جنرل ( اے آئی جی) پولیس اور زاہد اختر زمان کو ایڈیشنل چیف سیکرٹری جنوبی پنجاب تعینات کیا گیا۔ 

alphanew