وفاقی حکومت نے بین الاقوامی پروازوں کو اڑان بھرنے کی اجازت دے دی وفاقی حکومت نے بین الاقوامی پروازوں کو اڑان بھرنے کی اجازت دے دی
کراچی: وفاقی حکومت نے تمام انٹرنیشنل ائیرپورٹس سے بین الاقوامی پروازوں کو اڑان بھرنے کی اجازت دے دی۔ پاکستان سول ایوی ایشن اتھارٹی (پی... وفاقی حکومت نے بین الاقوامی پروازوں کو اڑان بھرنے کی اجازت دے دی

کراچی: وفاقی حکومت نے تمام انٹرنیشنل ائیرپورٹس سے بین الاقوامی پروازوں کو اڑان بھرنے کی اجازت دے دی۔

پاکستان سول ایوی ایشن اتھارٹی (پی سی اے ای) کی جانب سے جاری بیان کے مطابق حکومتی اجازت کے بعد ملک بھر کے بین الاقوامی ہوائی اڈوں سے آؤٹ باؤنڈ انٹرنیشنل فلائٹ  آپریشن (پاکستان سے دیگر ممالک کیلئے جانے والی پروازیں) آج رات 12 بجے سے شروع کردیا جائے گا۔

سول ایوی ایشن کے مطابق  تمام ملکی اور غیر ملکی ائیر لائنز کو  اپنی آؤٹ باؤنڈ بین الاقوامی پروازیں شروع کردیں گے جن میں شیڈول، نان شیڈول اور چارٹر پروازیں شامل ہیں۔

بین الاقوامی فلائٹ آپریشن آج رات 12بجے ملک کے تمام بین الاقوامی ائیرپورٹس سے سے شروع ہوجائے گا تاہم ایئرلائنز کو گوادر اور تربت کے ہوائی اڈوں سے آپریٹ کرنے کی اجازت نہیں ہوگی۔

سول ایوی ایشن کے بیان میں یہ واضح نہیں کہ آیا ملکی و غیر ملکی ائیرلائنز کو پاکستان کے بین الاقوامی ہوائی اڈوں پر  لینڈ کرنے کی بھی اجازت ہوگی یا صرف فی الحال آؤٹ باؤنڈ پروازوں کی اجازت دی گئی ہے۔

ترجمان سول ایوی ایشن کے مطابق ائیرلائنز کو ایس او پیز کی پاسداری کرنا لازمی ہوگا، ہوائی جہازوں میں جراثیم کش اسپرے اور سماجی فاصلے کو یقینی بنانا ہوگا جبکہ ہوائی اڈوں کو رش لگانے کی بھی اجازت نہیں ہوگی۔

خیال رہے کہ 26 فروری کو پاکستان میں کورونا کا پہلا کیس سامنے آیا تھا اور متاثرہ شخص کراچی ائیرپورٹ کے ذریعے ہی ایران سے پاکستان میں داخل ہوا تھا۔

ہوائی اڈوں اور سرحدی چیک پوائنٹس سے آنے والوں کو چیک کرنا وفاقی حکومت کی ذمہ داری ہے تاہم سندھ حکومت نے کراچی کے جناح انٹرنیشنل ائیرپورٹ نے اپنا ہیلتھ ڈیسک بھی قائم کررکھا ہے۔

واضح رہے کہ پاکستان میں کورونا وائرس کی وجہ سے بین الاقوامی پروازوں پر پابندی عائد ہے جبکہ حکومت نے پروازوں کی بندش کے دوران بیرون ملک پھنسے پاکستانیوں کی واپسی کیلئے کچھ غیر ملکی پروازیں خصوصی طور پر چلانے کی اجازت دے رکھی ہے البتہ ڈومیسٹک فلائٹ آپریشن بحال ہوچکا ہے۔

alphanew